24.4 C
Islamabad
منگل, مئی 14, 2024

ضرور پڑھنا

تبصرے

الرئيسيةصحتحکومت نے ادویات ساز کمپنیوں کا قیمتوں میں اضافے کا مطالبہ مسترد...

حکومت نے ادویات ساز کمپنیوں کا قیمتوں میں اضافے کا مطالبہ مسترد کردیا

پاکستان میں فارماسیوٹیکل مینوفیکچررز اور ریگولیٹرز نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ ادویات کی قیمتوں میں اضافہ نہیں کریں گے بلکہ مالیکیول ٹو مالیکیول کی بنیاد پر قیمتوں میں اضافے پر تبادلہ خیال کریں گے۔ پاکستان فارماسیوٹیکل مینوفیکچررز ایسوسی ایشن (پی پی ایم اے) اور ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (ڈریپ) کے درمیان قیمتوں میں اضافے پر بات چیت جاری ہے۔

ڈریپ نے ادویات کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کردیا۔

تاہم مذاکرات کے باوجود ڈریپ اور حکومت کی جانب سے اپنائے گئے تاخیری ہتھکنڈوں کی وجہ سے کوئی نتیجہ اخذ نہیں کیا جاسکا۔ پی پی ایم اے نے دعویٰ کیا ہے کہ ان ہتھکنڈوں کے نتیجے میں صنعت اور لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ کوویڈ 19 وبائی مرض کی وجہ سے بین الاقوامی منڈیوں میں ادویات کی تیاری میں استعمال ہونے والے خام مال سمیت فارماسیوٹیکل اجزاء کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ ہوا ہے۔ نتیجتا کنزیومر پرائس انڈیکس (سی پی آئی) میں 2022 کے اسی عرصے کے مقابلے میں جنوری 2023 میں 27.6 فیصد اضافہ ہوا۔ ذرائع کے مطابق شرح مبادلہ میں مسلسل اتار چڑھاؤ نے ایسی صورتحال پیدا کردی ہے کہ دوا ساز کمپنیاں پاکستان میں اپنا آپریشن برقرار نہیں رکھ سکتیں۔ درآمد شدہ خام مال پر ڈیوٹیز اور ٹیرف کے نفاذ سے اس میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

ڈریپ نے ملکی سطح پر ادویات کے خام مال کی تیاری کیلئے نئی پا لیسی تشکیل دیدی

اس سے قبل 70 دوا ساز کمپنیوں نے ایک خط لکھا تھا جس میں حکومت پر زور دیا گیا تھا کہ وہ بڑھتی ہوئی مہنگائی اور روپے کی قدر میں نمایاں کمی کی وجہ سے پاکستان میں ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرے۔ تاہم، حکومت نے اس مطالبے کو مسترد کر دیا، اور اس کے نتیجے میں، دوا ساز کمپنیوں نے یا تو اپنی مینوفیکچرنگ روک دی یا ضروری اور غیر ضروری ادویات کی محدود پیمانے پر پیداوار کا رخ کیا. حکومتی ترجمان نے دعویٰ کیا کہ حکومت صورتحال سے بخوبی آگاہ ہے اور عوام اور فارماسیوٹیکل انڈسٹری کے مفادات کو مدنظر رکھتے ہوئے فیصلے کرے گی۔ پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن (پی ایم اے) نے فارماسیوٹیکل انڈسٹری کو درپیش مسائل کا اعتراف کیا ہے۔ تاہم یہ عوام کے موجودہ معاشی حالات کی وجہ سے قیمتوں میں اضافے کے خیال کے خلاف تھا۔ ادویات کی عدم دستیابی ناگزیر طور پر قومی صحت کی ہنگامی صورتحال کا سبب بن سکتی ہے۔

ضرور پڑھنا

LEAVE A REPLY

براہ کرم اپنا تبصرہ درج کریں۔
من فضلك ادخل اسمك هنا