30.6 C
Islamabad
ہفتہ, مئی 4, 2024

ضرور پڑھنا

تبصرے

الرئيسيةاسلام آبادسی ڈی اے کی طرف سے ہاؤسنگ سوسائٹیز کے لیے سخت قوانین...

سی ڈی اے کی طرف سے ہاؤسنگ سوسائٹیز کے لیے سخت قوانین متحارف کردیئے گئے

اسلام آباد : کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) نے نئے قواعد و ضوابط کا مسودہ تیار کرکے ہاؤسنگ سوسائٹیوں میں گورننس اور مینجمنٹ کو بہتر بنانے کے لئے ایک اہم قدم اٹھایا ہے۔

ان اقدامات کا مقصد ایسے معاشروں کو درپیش چیلنجوں سے نمٹنا اور رہائشیوں کے لئے شفافیت، احتساب اور بہتر معیار زندگی کو فروغ دینا ہے۔

سی ڈی اے نے زون فائیو میں سمنا سمارٹ سٹی اور ساوان فارم ہاؤس کو غیر قانونی ہاؤسنگ سکیمز قرار دے دیا

ریگولیشنز ، جن سے رئیل اسٹیٹ سیکٹر پر نمایاں طور پر اثر انداز ہونے کی توقع ہے ، ڈویلپرز اور گاہکوں کے لئے یکساں طور پر زیادہ منظم اور منظم ماحول پیدا کریں گے۔

سی ڈی اے نے اسلام آباد میں رہائشی ضروریات کو پورا کرنے اور انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کے منصوبوں کی منظوری دے دی

حالیہ اطلاعات کے مطابق، سی ڈی اے نے ہاؤسنگ منصوبوں کو مؤثر طریقے سے سنبھالنے کے لئے حکومت کو سخت ہدایات کا ایک مجموعہ تجویز کیا ہے۔ اگرچہ شہری ادارے نے ابھی تک ان قواعد کو عام نہیں کیا ہے ، لیکن ذرائع سے پتہ چلتا ہے کہ انہیں اپریل 2023 میں سی ڈی اے بورڈ نے منظور کیا تھا۔

سی ڈی اے کا "گلیکسی انکلیو/مفتی محمود انکلیو” اور "وسٹا ویلی” غیر قانونی سوسائیٹیز کے خلاف نوٹس

نئے قوانین کی کچھ اہم خصوصیات میں شامل ہیں:

تمام ہاؤسنگ سوسائٹیوں کو الاٹیوں کو پلاٹوں کا قبضہ دینے سے پہلے سی ڈی اے سے این او سی حاصل کرنا ہوگا۔

پلاٹس صرف اسی صورت میں الاٹ / منتقل کیے جاسکتے ہیں جب وہ سوسائٹی کے منظور شدہ لے آؤٹ پلان کا حصہ ہوں۔

تمام ہاؤسنگ سوسائٹیز اپنے بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات اور سالانہ آڈٹ رپورٹس سی ڈی اے کو جمع کرائیں۔

تمام ہاؤسنگ سوسائٹیوں کو الاٹمنٹ لیٹرز جاری ہونے کے تین دن کے اندر سی ڈی اے کے ساتھ شیئر کرنا ہوں گے۔

سی ڈی اے بورڈ کی جانب سے 3500 روپے فی مربع گز کمرشلائزیشن فیس مقرر کی گئی ہے۔

نئے قوانین کا بہت سے اسٹیک ہولڈرز نے خیرمقدم کیا ہے، جن کا ماننا ہے کہ ان سے ہاؤسنگ سوسائٹیوں کی شفافیت اور احتساب کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ تاہم، کچھ ڈویلپرز نے اپنے کاروبار پر نئے قوانین کے اثرات کے بارے میں خدشات کا اظہار کیا ہے.

سی ڈی اے نے کہا ہے کہ نئے قوانین الاٹیوں کے مفادات کے تحفظ اور اسلام آباد میں ہاؤسنگ سوسائٹیوں کی منظم ترقی کو یقینی بنانے کے لئے ضروری ہیں۔ اتھارٹی نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ نئے قواعد کو نافذ کرنے میں لچک دار ہوگی اور وہ ڈویلپرز کے ساتھ مل کر کام کرے گی تاکہ ہموار منتقلی کو یقینی بنایا جاسکے۔

توقع ہے کہ نئے قوانین آنے والے مہینوں میں نافذ العمل ہوجائیں گے۔

ضرور پڑھنا

LEAVE A REPLY

براہ کرم اپنا تبصرہ درج کریں۔
من فضلك ادخل اسمك هنا