34.4 C
Islamabad
جمعرات, جولائی 4, 2024

ضرور پڑھنا

تبصرے

الرئيسيةاسلام آبادکمیشن کی تقرری میں تاخیر، اسلام آباد کے ماسٹر پلان پر نظرثانی...

کمیشن کی تقرری میں تاخیر، اسلام آباد کے ماسٹر پلان پر نظرثانی کا عمل روک گیا

اسلام آباد : حکومت کی جانب سے کمیشن ممبران کی تقرری کی منظوری میں عدم دلچسپی کے باعث اسلام آباد کے ماسٹر پلان پر نظرثانی کا عمل تاخیر کا شکار ہوگیا۔

چیئرمین سی ڈی اے کا غیر قانونی مکانات ہٹانے میں ناکامی پر اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی

دسمبر 2022 میں کیپیٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) نے وزارت داخلہ کو ایک سمری پیش کی تھی جس میں کمیشن ممبران کے ناموں کی منظوری کی درخواست کی گئی تھی لیکن گزشتہ پانچ ماہ سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

سی ڈی اے کا "گلیکسی انکلیو/مفتی محمود انکلیو” اور "وسٹا ویلی” غیر قانونی سوسائیٹیز کے خلاف نوٹس

سی ڈی اے نے کمیشن کے لیے 20 نام تجویز کیے اور وفاقی حکومت سے درخواست کی کہ وہ پی ٹی آئی کی سابقہ حکومت کی جانب سے تشکیل دیے گئے غیر فعال کمیشن پر نظر ثانی کرے۔

ایف آئی اے نے سی ڈی اے کی جانب سے عمارتوں میں اضافی منزلیں بنانے کی مبینہ بے ضابطگیوں کی تحقیقات شروع کردیں

ایک حالیہ پیش رفت میں اسلام آباد وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ کے ایک رکن کو اس فہرست میں شامل کیا گیا ہے۔ حکومت کی غیر فعالیت نے ماسٹر پلان پر فوری نظر ثانی کو روک دیا ہے ،

جس سے شہر کی ترقی پر منفی اثرات کے بارے میں فکرمند عہدیداروں میں مایوسی پیدا ہوگئی ہے۔ سی ڈی اے نے اجلاسوں میں شرکت کرنے والے ہر کمیشن ممبر کے لئے 25 ہزار روپے اعزازیہ کی منظوری دی۔

ماسٹر پلان پر نظر ثانی اسلام آباد اور اس کے گردونواح کے علاقوں کی ترقی کے لیے انتہائی ضروری ہے۔

یہ اس بات کو یقینی بنائے گا کہ شہر کا بنیادی ڈھانچہ اس کی بڑھتی ہوئی آبادی کی ضروریات کو پورا کرتا  ہے اور ماحول یات کا تحفظ کرتا ہے۔

کمیشن کے ممبران کی تقرری میں تاخیر تشویش کا باعث ہے اور حکام حکومت پر زور دے رہے ہیں کہ وہ  شہر اور اس کے رہائشیوں کے بہترین مفاد میں کارروائی کرے۔

ضرور پڑھنا

LEAVE A REPLY

براہ کرم اپنا تبصرہ درج کریں۔
من فضلك ادخل اسمك هنا