27 C
Islamabad
جمعہ, مئی 10, 2024

ضرور پڑھنا

تبصرے

الرئيسيةراولپنڈیسپریم کورٹ نے کینٹ کے علاقوں سے پرائیویٹ سکولز کی منتقلی کا...

سپریم کورٹ نے کینٹ کے علاقوں سے پرائیویٹ سکولز کی منتقلی کا شیڈول طلب کر لیا۔

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے بدھ کو ملک بھر کے تمام 42 کنٹونمنٹ بورڈز سے نجی اسکولوں کی منتقلی کا شیڈول طلب کرلیا۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کنٹونمنٹ بورڈ کے وکیل سے استفسار کیا کہ اس کے سابقہ ​​حکم کی تعمیل کیا ہے۔ وکیل نے موقف اختیار کیا کہ تین ہزار سکولوں کو نوٹس جاری کر دیے گئے ہیں جبکہ اس حوالے سے اخبارات میں اشتہارات بھی دیے گئے ہیں۔

عدالتی استفسار پر وکیل نے کہا کہ وہ کنٹونمنٹ کے علاقوں سے بڑے اسکولوں کو خالی کرانے کا سوچ رہے ہیں۔ جب قانون اجازت نہیں دیتا تو ہم اس کی اجازت کیسے دیں گے؟ جسٹس اعجاز الاحسن نے وکیل سے استفسار کیا۔ کیا ہم قانون سے بالاتر ہیں؟ جج نے سوال کیا.

دریں اثنا، عدالت نے وکیل کو ہدایت کی کہ وہ شیڈول پیش کریں جس میں بتایا جائے کہ نظرثانی کی درخواستیں مسترد ہونے کی صورت میں کنٹونمنٹ کے علاقوں سے نجی اسکول کب منتقل کیے جائیں گے اور سماعت ایک ماہ کے لیے ملتوی کر دی گئی۔

عدالت نے ملک بھر کے تمام 42 کنٹونمنٹ بورڈز میں پرائیویٹ اسکولوں کو بند کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے 31 دسمبر 2021 کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے عدالت عظمیٰ کے ذریعہ انخلاء کے حکم پر پہلے ہی روک لگا دی تھی۔

اسی طرح نجی تعلیمی اداروں کے وکیل سید قلب حسن نے عدالت کو بتایا تھا کہ ملک بھر کے 42 کنٹونمنٹ بورڈز میں واقع 8300 نجی اسکولوں میں 37 لاکھ سے زائد بچے داخل ہیں۔

جب پرائیویٹ سکولز اینڈ کالجز ایسوسی ایشن نے سپریم کورٹ میں نظرثانی کی درخواست دائر کی تو کنٹونمنٹ بورڈز نے پہلے ہی سکولوں کو سیل کرنا اور خالی کرنے کے نوٹس جاری کرنا شروع کر دیا تھا۔

ضرور پڑھنا

LEAVE A REPLY

براہ کرم اپنا تبصرہ درج کریں۔
من فضلك ادخل اسمك هنا